گورنرسندھ عمران اسماعیل سے ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیویلپرز کے 15 رکنی وفد کی محسن شیخانی کی سربراہی میں گورنرہاﺅس میں ملاقات
وفد نے کنسٹرکشن انڈسٹری کو درپیش چیلنجز اور دیگر مسائل سے آگاہ کیااور تجاویز بھی پیش کیں
ماضی میں ملک کے دیگر صوبوں کی طرح کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں کے لئے ریگولرازیشن کی حکمت عملی مرتب کی جائے۔ ریگولرائزیشن پالیسی کے تحت ریگولرائزیشن کمیشن کا قیام ناگزیر ہے۔ وفد کی جانب سے تجویز
کنسٹرکشن کے حوالے سے بلڈنگ این او سی اوراپروول پروسیجرز ون ونڈو آپریشن کے تحت ممکن بنایا جائے۔ وفد کی جانب سے تجویز
ون ونڈو آپریشن پر عملدرآمد سے پروجیکٹ مکمل ہونے پر بلڈرز اور رہائشیوں کو بعد میں کسی بھی قسم کی پریشانی کا سامنا نہیں ہوگا۔ آباد وفد
نسلہ ٹاور کے مکین جس پریشانی سے گذر رہے ہیں اسے انسانی بنیادوں پر دیکھا جائے۔ نسلہ ٹاور کے رہائشیوں کی بحالی کے لئے کوئی حکمت عملی تیار کی جائے۔ آباد وفد
وفد نے وزیراعظم سے ملاقات کی خواہش کا اظہار کیا جس پر گورنرسندھ نے جلد ملاقات کرانے کی یقین دہانی کرائی

UNAIDS Country Director for Pakistan and Afghanistan Dr. Maria Elena G. Filio Borromeo called on Governor Imran Ismail today at Governor House.

UNAIDS Country Director for Pakistan and Afghanistan Dr. Maria Elena G. Filio Borromeo called on Governor Imran Ismail today at Governor House.

گورنر سندھ سے یو این ایڈز کی کنٹری ڈائریکٹر برائے پاکستان و افغانستان کی گورنر ہاﺅس میں ملاقات
ایچ آئی وی ایڈز کے پھیلاﺅ کی روک تھام کے لئے آگاہی مہم ناگزیر ہے۔ گورنر سندھ
مرض میں مبتلا افراد کو معاشرے کا کارآمد شہری بنانے میں یو این ایڈز کی کاوشیں اور خدمات قابل ستائش ہیں۔ گورنر سندھ
کراچی (اپریل 26)
گورنر سندھ عمران اسماعیل سے یو این ایڈز (UNAIDS) کی کنٹری ڈائریکٹر برائے پاکستان و افغانستان Dr. Maria Elena G Filio Borromeo نے گورنر ہاﺅس میں ملاقات کی۔ کنٹری ڈائریکٹر برائے پاکستان و افغانستان ڈاکٹر ماریہ ایلینا جی فلیو بورومیو نے گورنر سندھ کو یو این ایڈز کی کاوشوں، مریضوں کے علاج معالجہ کے اقدامات اور دیگر متعلقہ امور پر تفصیلی بریفنگ دی۔ گورنر سندھ نے کہا کہ ایچ آئی وی ایڈز کی تشخیص اور مریضوں کی علاج معالجہ کی سہولیات کی فراہمی میں یو این ایڈز (UNAIDS)نمایاں کردار ادا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یو این ایڈز کی کاوشیں اور خدمات قابل ستائش ہیں۔ گورنر سندھ نے کہا کہ ایچ آئی وی کیسز میں اضافہ نہایت تشویشناک ہے اس ضمن میں بھرپور آگاہی مہم کی اشد ضرورت ہے تاکہ اس مرض میں مبتلا افراد علاج کروا کر اس سے نجات حاصل کرسکیں۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ ابتدائی طور پر بھرپور علاج کے ذریعے اس مرض میں مبتلا افراد کو معاشرے کا کارآمد شہری بنایا جاسکتا ہے، معاشرے کے ان طبقات میں جن میں عدم آگاہی کے باعث ایچ آئی وی ایڈز میں مبتلا ہونے کا زیادہ اندیشہ ہے ان کی رہنمائی بہت ضروری ہے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ نشہ کرنے والے افراد ، قیدیوں اور دیگر گروپوں میں ایچ آئی وی ایڈز کے مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد تشویشناک ہے جس کی جانب خاص توجہ دینا ہوگی۔گورنر سندھ نے مزید کہا کہ سندھ ایڈز کنٹرول پروگرام اور یو این ایڈز کے باہمی رابطوں کو مزید مضبوط بنانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ضرورت مند اور نادار افراد کے لئے ہیلتھ کارڈ کا اجراءکیا ہے جس کے تحت 7 لاکھ روپے سے زائد سے صحت کی سہولیات میسر آئےں گی۔ گورنر سندھ نے کنٹری ڈائریکٹر یو این ایڈز کو وفاق کی جانب سے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ ہمیں مل کر اس مرض میںمبتلا افراد کی بحالی کا کام کرنا ہوگا۔