گورنر سندھ عمران اسماعیل کی دعوت اسلامی کے مرکز فیضان مدینہ آمد
محفل میلاد النبی ﷺ کی پر نور محفل میں شرکت
فیضان مدینہ کے طالب علموں اور علمائے کرام سے ملاقات
عید میلاد النبی ﷺ ہمارے دلوں کے بہت نزدیک ہے۔ گورنر سندھ
ہمارے پیارے نبی ﷺ نے اپنی پوری زندگی میں محبت بانٹی۔ گورنر سندھ

Sindh Governor Imran Ismail along with Chief Minister Syed Murad Ali Shah visited the shrine of revered Sufi saint Abdullah Shah Ghazi at the conclusion of his 1289th Urs.

Sindh Governor Imran Ismail along with Chief Minister Syed Murad Ali Shah visited the shrine of revered Sufi saint Abdullah Shah Ghazi at the conclusion of his 1289th Urs.

Governor Sindh Imran Ismail visited the Shrine of Hazrat Abdullah Shah Ghazi on 1289th Urs of the sufi saint.
On the occasion he was flanked by Sindh Chief Minister Syed Murad Ali Shah, Minister for Local Government Syed Nasir Hussain Shah, other members of Provincial Assembly and officers of different departments.
Talking to media, Imran Ismail said that Sindh is the land of sufi saints. Message of sufi saints was to spread peace and humanity.
“Pakistan will always remain on the map of world with the prayers of sufis”.
We all pray for the prosperity of our country.
He said that to ensure prevalence of peace in the country we need to follow the teachings of sufi saints.
Governor said that world need to pay attention towards the atrocities against innocent Kashmiris otherwise it will disturb the peace of entire region and the world also. Time is not far when Kashmiris will also enjoy freedom.
He said that Indian atrocities have exposed Indian government’s cruel face. Pakistan is a peace loving country if forced into war Pakistan will respond in befitting manner. Our Army posses the capability of foiling all nefarious designs of the enemy of the country. The incumbent government is raising Kashmir issue on each international forum.
Replying to a query, he said that federal government will cooperate with the provincial government.

گورنر سندھ کی عبداللہ شاہ غازی ؒ کے 1289ویں عرس کی اختتامی تقریب میں شرکت
گورنر سندھ عمران اسماعیل نے عبداللہ شاہ غازی ؒ کے 1289ویں عرس کی تین روزہ اختتامی تقریب میں شرکت کی۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ ،صوبائی وزیر برائے بلدیات سید ناصر حسین شاہ سمیت ممبران سندھ اسمبلی جمال صدیقی،علی عزیز، ضلعی انتظامیہ ، محکمہ پولیس اور محکمہ اوقات کے افسران سمیت عوام کی بڑی تعداد بھی موجود تھے۔ گورنر سندھ نے مزار پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کرتے ہوئے ملک و قوم کی سلامتی ، خوشحالی ، ترقی اور استحکام کے علاوہ کشمیریوں کے لئے بھی خصوصی دعائیں مانگیں۔ اس موقع پر وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ سندھ صوفیائے کرام اور بزرگان دین کی دھرتی ہے اور صوفیوں کا پیغام انسانیت و محبت ہے، صوفیوں اور بزرگان دین کی دعاﺅں سے پاکستان ہمیشہ قائم و دائم رہے گا، ہم سب پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کے لئے دعا کرتے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ صوبہ اور ملک میں مکمل امن وامان کے قیام اور مذہبی رواداری کے فروغ کے لئے صوفیائے کرام اور بزرگان دین کی تعلیمات پر عملدرآمد ضروری ہے تاکہ باہمی اعتماد ، محبت اور اخوت کا پیغام عام ہوسکے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے ظلم و ستم پر دنیا کو توجہ دینا ہوگی، بصورت دیگر پورے خطے سمیت اقوام عالم پر مضر اثرات مرتب ہونے کا خطرہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب وہ وقت دور نہیں جب کشمیری بھی آزاد فضاﺅں میں سانس لیں گے۔ بھارت کی کشمیریوں پر کئے جانے والے ریاستی ظلم و بربریت سے اقوام عالم کے سامنے بھارت سرکار کا گھناﺅنہ چہرہ بے نقاب ہوگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اگر ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو ہر جاحیت کا بھرپور جواب دیا جائے گا اور ہماری پاک فوج ، دشمنوں کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملانے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت ہر فورم پر کشمیر کا مسئلہ اجاگر کررہی ہے۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ وفاق صوبہ کے ساتھ ہر ممکن مدد اور تعاون جاری رکھے گا۔ ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ رواں سال وفاقی بجٹ سمیت تمام صوبوں کے بجٹ میں کٹوتی کی گئی ہے اور یہ تاثر بالکل غلط ہے کہ وفاق کی جانب سے صوبہ سندھ کے ساتھ کسی بھی قسم کی کوئی زیادتی کی گئی ہے۔