‏عید میلادالنبیﷺ کے موقع پر وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر گورنرسندھ عمران اسماعیل کی جانب سے گورنر ہاﺅس میں لنگر عام شروع کردیا گیا۔
آج عوام کی بڑی تعداد نے لنگر میں شرکت کی۔ 16 اکتوبر سے شروع ہونے والا لنگر عام 19 اکتوبر 2021ء تک بعد نماز مغرب تا نماز عشاء جاری رہے گا۔
‏لنگر عام میں شرکت کے لئے گورنر ہاﺅس کا گیٹ نمبر 1 مقررہ وقت تک کھلا رہے گا۔

Governor Sindh performs first dry run of Green Line project

Governor Sindh performs first dry run of Green Line project

کراچی (اکتوبر 04)
گورنر سندھ عمران اسماعیل نے سی بریز پلازہ سے حیدری مارکیٹ تک بذریعہ گرین لائن بس سے گرین لائن منصوبہ کا دورہ کیا۔ اس موقعہ پر ایم این اے آفتاب احمد صدیقی، اراکین صوبائی اسمبلی فردوس شمیم نقوی، حلیم عادل شیخ، خرم شیر زمان اور بلال احمد غفار کے علاوہ اشرف قریشی اور عدنان اسماعیل بھی گورنر سندھ کے ہمراہ تھے۔ اس موقعہ پر گورنر سندھ کو ایس آئی ڈی سی ایل کے افسران نے منصوبہ کی پیش رفت اور تکمیل کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ گورنر سندھ کو گرین لائن بس کے اندر فراہم کی جانے والی سہولیات میں آٹو میٹک لوکیشن سسٹم، ریئل ٹائم مسافروں کی معلومات، نگرانی کے کیمرے، آٹو ڈور سسٹم، آرام دہ ماڈیولر سیٹیں، ائر کنڈیشننگ سسٹم اور ڈیجیٹل اسکرین کے بارے میں بھی تفصیلات سے آگاہ کیا گیا۔
گورنر سندھ نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج میں نے بس کا ڈرائی رن کیا ہے اور جو کام رہتا ہے اسے مکمل کر کے گرین لائن بس عوام کے حوالے کریں گے، گرین لائن بہت خوبصورت منصوبہ ہے ، یہ دنیا کی بہترین سفری سہولیات میں سے ایک ہے اور اس کے ساتھ ساتھ یہ منصوبہ ورلڈ اسٹینڈرڈ سے کم نہیں۔ انہوں نے کہا کہ گرین لائن پروجیکٹ کراچی کے عوام کی سہولت کیلئے بنایا گیا ہے اور اس کا کرایہ بھی بہت مناسب ہوگا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ اس منصوبہ کے لئے چالیس بسیں کراچی پہنچ گئی ہیں باقی چالیس بسیں اس مہینے کے تیسرے ہفتہ تک پہنچ جائیں گی اور ہماری خواہش ہے کہ ڈیڑھ مہینے کے اندر اندر یہ ٹرانسپورٹ سسٹم عوام کی سہولیت کے لئے شروع کردیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ 35 ارب کی لاگت سے مکمل کیا جانے والا گرین لائن بس منصوبہ کا با قاعدہ افتتاح وزیر اعظم عمران خان کریں گے۔ میڈیا کی جانب سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ گرین بسوں کے لئیے ڈرائیورز کو تربیت دی جا رہی ہے۔ انھوں نے مذید کہا کہ منصوبہ میں اس بات کا خاص طور پر خیال کیا گیا ہے کہ اسپیشل افراد کے لئے ہر طرح کی سہولت میسر ہو۔ ایک اور سوال کے جواب میں گورنرسندھ نے کہا کہ کراچی سرکلر ریلوے بھی جلد شروع ہو جائے گا اور کوشش ہے کہ اگلے ڈیڑھ ماہ میں وزیر اعظم اس منصوبے کا بھی افتتاح کردیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے یہ بات صاف صاف کہہ چکے ہیں کہ کرپشن برداشت نہیں کریں گے، پینڈورا بکس میں جن لوگوں کے نام آئے ہیں ان کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی ہوگی۔ فائر ٹینڈرز پر کئے گئے سوال پر گورنر سندھ نے کہا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے 52 فائر ٹینڈرز فراہم کئے لیکن کے ایم سی کے پاس تربیت یافتہ افرادی قوت ہی نہیں ہے ، انہوں نے کہا کہ تمام فائر ٹینڈرز کو فعال رکھنے کے لئے کے ایم سی سمیت صنعتی ایسوسی ایشنز سے پارٹنر شپ بھی کی ہے۔