گورنرسندھ عمران اسماعیل سے ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیویلپرز کے 15 رکنی وفد کی محسن شیخانی کی سربراہی میں گورنرہاﺅس میں ملاقات
وفد نے کنسٹرکشن انڈسٹری کو درپیش چیلنجز اور دیگر مسائل سے آگاہ کیااور تجاویز بھی پیش کیں
ماضی میں ملک کے دیگر صوبوں کی طرح کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں کے لئے ریگولرازیشن کی حکمت عملی مرتب کی جائے۔ ریگولرائزیشن پالیسی کے تحت ریگولرائزیشن کمیشن کا قیام ناگزیر ہے۔ وفد کی جانب سے تجویز
کنسٹرکشن کے حوالے سے بلڈنگ این او سی اوراپروول پروسیجرز ون ونڈو آپریشن کے تحت ممکن بنایا جائے۔ وفد کی جانب سے تجویز
ون ونڈو آپریشن پر عملدرآمد سے پروجیکٹ مکمل ہونے پر بلڈرز اور رہائشیوں کو بعد میں کسی بھی قسم کی پریشانی کا سامنا نہیں ہوگا۔ آباد وفد
نسلہ ٹاور کے مکین جس پریشانی سے گذر رہے ہیں اسے انسانی بنیادوں پر دیکھا جائے۔ نسلہ ٹاور کے رہائشیوں کی بحالی کے لئے کوئی حکمت عملی تیار کی جائے۔ آباد وفد
وفد نے وزیراعظم سے ملاقات کی خواہش کا اظہار کیا جس پر گورنرسندھ نے جلد ملاقات کرانے کی یقین دہانی کرائی

Governor Sindh offers condolence to Nazim Jhokio’s family, assures full support of federal govt.

Governor Sindh offers condolence to Nazim Jhokio’s family, assures full support of federal govt.

گورنرسندھ عمران اسماعیل کی مقتول ناظم جوکھیو کے ورثاءسے ملاقات
اظہار تعزیت کیا ۔مکمل تعاون کی یقین دہانی ۔ملوث عناصر کو ہر صورت قانون کی گرفت میں لائیں گے ۔ میڈیا سے گفتگو

کراچی ( نومبر06)
وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر گورنرسندھ عمران اسماعیل نے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کے ہمراہ ملیر کے آچر سالار گاو¿ں میں مقتول ناظم جوکھیو کے ورثا ءسے ملاقات کی اور لواحقین سے تعزیت کا اظہار بھی کیا ۔ گورنرسندھ نے مقتول ناظم جوکھیو کے ورثاءاور متعلقین سے وقوعہ کی مکمل تفصیلات حاصل کیں ۔ اس موقع پر گورنرسندھ نے کہا کہ انتہائی افسوسناک واقعہ تھا جس کی بھرپور مذمت کرتے ہیں، مقتول ناظم جوکھیو کیس کی پیشرفت کے حوالہ سے وزیراعظم مسلسل رابطہ میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ناظم جوکھیو کے ورثا کو یقین دلاتاہوں کہ ملوث عناصر کو ہر صورت قانون کی گرفت میں لائیں گے۔ بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنرسندھ نے کہا کہ وزیراعظم نے مجھے یہاں بھیجا ہے تاکہ تفصیلات حاصل کر کے وزیر اعظم کو آگاہ کروں۔ انہوں نے کہا کہ ناظم جوکھیوکے ورثاءکوہرقسم کا تعاون فراہم کریں گے اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے اس ضمن میں وزیراعلیٰ سندھ اور آئی جی سندھ سے بھی بات کروں گا ۔ انہوں نے کہا کہ ناظم جوکھیو کو بے دردی سے مارا گیا اور ورثاءکو دھمکیاں بھی مل رہی ہیں تاحال اصل قاتلوں کے نام مقدمہ میں شامل نہیں کئے گئے، یہاں پر جنگل کا قانون چلنے نہیں دیں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ طاقتور، مظلوم پر ظلم کرے موجودہ دور حکومت میں نہیں ہوسکتا ۔ انھوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی جے آئی ٹی پر اعتماد نہیں ہے اس ضمن میں وزیراعظم سے کہہ کر وفاقی سطح پر جے آئی ٹی بنواﺅنگا ۔ ایک سوال کے جواب میں گورنرسندھ نے کہا کہ افسوس کہ سندھ اسمبلی میں کئی ایسے لوگ ہیں جن پر کرمنل کیسز ہیں، وزیراعلی ایسے ممبران کا ٹرائل کریں ۔ دیکھنا ہے کہ وزیراعلی کب ایسے مظلوموں کا سہارہ بنتے ہیں ۔