بیسویں سندھ گالف چیمپئن شپ کی اختتامی تقریب سے گورنرسندھ عمران اسماعیل کا خطاب
صوبے میں کھیلوں کے فروغ سے نوجوان مثبت اور تعمیری سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔ ملک کی طرح صوبے میں بھی گالف کھیل پزیرائی حاصل کررہاہے۔ گورنر سندھ
‏گالف دیکھنے میں آسان کھیل لگتا ہے لیکن بہت مشکل کھیل ہے۔ کھیلوں میں خواتین کا بھی حصہ لینا خوش آئند ہے۔ کراچی گالف کلب اس وقت سندھ گالف ایسوسی ایشن کا گھر ہے۔ گورنر سندھ
‏ایسوسی ایشن ملک بھر میں گالف کھیل کے فروغ کے لئے بھرپور اقدامات یقینی بنارہی ہے۔ اس وقت پاکستان میں سب سے متحرک کردار ایسوسی ایشن کا ہی ہے۔ اسد خان
ایسوسی ایشن کے ممبران صوبے کے مختلف کلبز سے تعلق رکھتے ہیں۔ سندھ گالف ایسوسی ایشن اسد خان

Governor Sindh Imran Ismail at the ceremony of the I.T. Minister’s Forum for Youth, Innovation, Industry & Ease of Doing business at the 19th ICTN Asia 2019 International I.T. & Telecom.

Governor Sindh Imran Ismail at the ceremony of the I.T. Minister’s Forum for Youth, Innovation, Industry & Ease of Doing business at the 19th ICTN Asia 2019 International I.T. & Telecom.

Governor Sindh Imran Ismail at the ceremony of the I.T. Minister’s Forum for Youth, Innovation, Industry & Ease of Doing business at the 19th ICTN Asia 2019 International I.T. & Telecom Show said that the minorities in the country had equal rights as per the vision of Quaid-e-Azam Muhammad Ali Jinnah and they were completely free to follow their religions.

While talking to the media, the Governor said that masses were facing difficulties due to non-availability of basic facilities in Sindh.

He said that incidents occur everywhere across the world however there should be an effective mechanism to cope with different situations.

Unfortunately citizens in the province of Sindh were not being provided proper health facilities. The hospitals being run under the administrative control of Sindh government were in poor condition.

Imran Ismail said that Sindh Chief Minister Syed Murad Ali Shah was well aware of the situation, however, he said he would contact the Chief Minister and assure him the support of Federal government if needed.

 پاکستان میں آئی ٹی سیکٹر میں سرمایہ کاری کرنے کے بہترین مواقع موجو ہیں۔گورنرسندھ

 آئی ٹی سی ایس ایشیا ایک ایسا پلیٹ فارم فراہم کررہاہے جس سے ملک آئی ٹی سیکٹر میں با لخصوص ترقی کررہا ہے۔تقریب سے خطاب

 کراچی ( ستمبر 18 )  گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ پاکستان میں آئی ٹی سیکٹر میں سرمایہ کاری کرنے کے بہترین مواقع موجو ہیں اس ضمن میں موجودہ حکومت با صلاحیت نوجوانوں کی حوصلا افزائی کرنے کے لئے ان کو آسان شرائط پر قرضہ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ان کی مہارت کو مزید اجاگر کرنے کے لئے سہولیات بھی فراہم کررہی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آئی ٹی سی این میں منعقدہ کانفرنس باعنوان آئی ٹی مینسٹرز فورم فار یوتھ ، انویشن(Innovation )، انڈسٹری اور ایز آف ڈوئنگ بزنس کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ گورنرسندھ نے کہ آئی ٹی سیکٹر کے زریعے ملکی درآمدات کو دوگنا ہ کرنے کی گنجائش موجود ہے اس ضمن میں وزیراعظم پاکستان نے خصوصی ٹاسک آئی ٹی منسٹر کو دیا ہے جس کے تحت حکومت پاکستان کی ہر ممکن کوشش ہے کہ وہ ان نوجوانوں جن کے پاس آئی ٹی کے حوالے سے جدید تجویز ہیں ان کو ہر ممکن معاونت فراہم کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ آئی ٹی سی ایس ایشیا ایک ایسا پلیٹ فارم فراہم کررہاہے جس سے ملک آئی ٹی سیکٹر میں با لخصوص ترقی کررہا ہے ۔ اس وقت پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کا ماحول ہمارے ہماسائیوں سے زیادہ پر کشش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ آف انویسٹمنٹ کے تحت سرمایہ کاری کرنے والوں کو ون ونڈو آپریشن کی سہولیات کے ساتھ ساتھ دیگر کئی مراعات د ی جارہی ہیں ۔ پاکستان میں کم لاگت پر تجربہ کار اور ہنر مند افرادی قوت سے استفادہ حاصل کیا جا سکتا ہے جو کہ کسی بھی کاروباری کے لئے مفید ثابت ہوتا ہے ۔ انہوں نے صنعتکاروں اورسرمایہ داروں سے کہا کہ پاکستان ایک ابھرتی ہوئی معیشت ہے جہاں سرمایہ کاری کرنے کے لئے آج بہترین مواقع میسر ہیں ضرورت اس بات کی ہے کہ دنیا یہ جان لے کہ پر امن پاکستان سرمایہ کاروں کے لئے جنت ہے ۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنرسندھ نے کہا کہ قائد اعظم کے وژن کے مطابق پاکستان میں اقلیتی برادری کو یکساں حقوق حاصل ہیں ان کو اپنی مذہبی رسومات کی ادائیگی میں مکمل آزادی ہے سندھ میں صحت ،صفائی اور دیگر مسائل کے بارے میں کئے گئے ایک سوال پر گورنرسندھ نے کہا کہ عوام کو زندگی کی بنیادی سہولیات پہچاناحکومت کی اولین ذمہ داری ہے جبکہ سندھ میں بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی سے عوم پریشان ہے ۔ انہوںنے کہا کہ حادثے دنیا میں ہر جگہ رونما ہوتے ہیں مگر ضرورت اس امر کی ہے کہ ان سے نمٹنے کا موثرنظام ہونا چاہئے بدقسمتی سے سندھ میں صحت کی سہولیات عام آدمی کو میسر نہیں جبکہ حکومت سندھ کے زیر انتظام چلنے والے اسپتال ایسا منظرپیش کرتے ہیں کہ یقین نہیں آتا کہ یہاں انسانوں کا علاج کیا جاتا ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ تما م چیزوں سے واقف ہیں ان کی ترجیحات کیا ہے اس پر ان سے بات کروں گا اگر ان کو وفاقی حکومت کی مدد درکار ہے تو میں یقین دلاتاہوں کہ بھرپور تعاون فراہم کیا جائے گا ، سندھ حکومت کی جانب سے کراچی کا کچرا اٹھانے کی مہم کے بارے میں کئے گئے سوال پر گورنرسندھ نے کہا کہ اس ضمن میں ہر ممکن مدد اور تعاون کی بھی یقین دہانی کروائی ۔ اس سے قبل وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈاکٹرخالد مقبول نے بھی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اپنی وزارت کی جانب سے کئے گئے اقدامات پر روشنی ڈالی ۔ 

پاڪستان ۾ آئي ٽي شعبي اندر سيڙپڪاري ڪرڻ جا بھترين موقعا موجود آھن، گورنر سنڌ

آئي ٽي سي ايس ايشيا ھڪ اھڙو پليٽ فارم ڏئي پيو جنھن سان ملڪ آئي ٽي سيڪٽر ۾ خاص طور ترقي ڪري رھيو آھي، تقريب کي خطاب

ڪراچي (سيپٽمبر 18)،سنڌ جي گورنر عمران اسماعيل چيو آھي تھ پاڪستان اندر آئي ٽي شعبي ۾ سيڙپڪاري ڪرڻ جا بھترين موقعا موجود آھن ان ڏس ۾ موجوده حڪومت باصلاحيت نوجوانن جي ھمٿ افزائي ڪرڻ لاءِ انھن کي آسان شرطن تي قرض ڏيڻ سان گڏوگڏ کين مھارت کي وڌيڪ اجاڳر ڪرڻ لاءِ سھولتون بھ ڏئي رھي آھي. اھڙن خيالن جو اظهار هن آئي ٽي سي اين ۾ ڪوٺايل ڪانفرنس ”آئي ٽي مينسٽرز فورم فار يوٿ، انويشن، انڊسٽري ۽ ايز آف ڊوئنگ بزنس“ واري عنوان هيٺ تقريب کي خطاب ڪندي ڪيو. گورنر سنڌ آئي ٽي شعبي اندر ملڪي درآمد کي ٻيڻ ڪرڻ جي گنجائش موجود آهي ان ڏس ۾ وزيراعظم پاڪستان خاص ٽاسڪ آئي ٽي منسٽر کي ڏنو آهي جنهن تحت حڪومت پاڪستان جي هر ممڪن ڪوشش آهي ته هو اهڙن نوجوانن جنهن وٽ آئي ٽي بابت جديد تجويزون آهن انهن جي هر ممڪن معاونت ڪئي وڃي. هن چيو ته آئي ٽي سي ايس ايشيا هڪ اهڙو پليٽ فارم ڏئي رهيو آهي جنهن سان ملڪ آئي ٽي شعبي اندر خاص ترقي ڪري رهيو آهي. هن وقت پاڪستان ۾ سيڙپڪاري ڪرڻ وارو ماحول اسان جي پاڙيسرين کان وڌيڪ پرڪشش آهي. هن چيو ته بورڊ آف انويسٽمنٽ تحت سيڙپڪاري ڪرڻ وارن کي ون ونڊو آپريشن جي سهولتن سميت ٻيون ڪيترائي مراعتون ڏنيون پيون وڃن. پاڪستان ۾ گهٽ لاڳت تي تجربيڪار ۽ هنرمند افرادي قوت سان فائدو حاصل ڪري سگهجي ٿو جيڪو ڪنهن به ڪاروبار لاءِ فائديمند ثابت ٿيندو. هن صنعتڪارن ۽ سيڙپڪارن کي چيو ته پاڪستان هڪ اڀرندڙ معيشت آهي جتي سيڙپڪاري ڪرڻ لاءِ اڄ بهترين موقعا ميسر آهن. ضرورت ان ڳالهه جي آهي ته سڄي جڳ اهو ڄاڻي وٺي ته پرامن پاڪستان سيڙپڪارن لاءِ جنت آهي. ميڊيا سان ڳالهائيندي گورنر سنڌ چيو ته قائداعظم جي وزن موجب پاڪستان ۾ اقليتي برادري کي هڪجهڙا حق حاصل آهن ان کي پنهنجي مذهبي رسمن جي ادائيگي ۾ مڪمل آزادي آهي سنڌ ۾ صحت،ص فائي ۽ ٻين مسئلن بابت ڪيل هڪ سوال تي گورنر سنڌ چيو ته عوام کي زندگي جون بنيادي سهولتون ڏيڻ حڪومت جي اولين ذميداري آهي جڏهن ته سنڌ ۾ بنيادي سهولتن جي عدم فراهمي تي عوام پريشان آهي. هن چيو ته حادثا دنيا ۾ هر جاءِ ٿين ٿا پر ضرورت ان ڏس جي آهي ته انهن کي منهن ڏيڻ لاءِ بهترين نظام هجڻ گهرجي بدقسمتي سان سنڌ ۾ صحت جون سهولتون عام آدمي کي ميسر نه آهن جڏهن ته سنڌ حڪومت جي انتظام هيٺ هلندڙ اسپتال اهڙيون منظر پيش ڪن ٿيون جو ڀروسو ئي نه ٿيندو آهي هتي انسانن جو علاج ڪيو ويندو آهي. هن وڌيڪ چيو ته وڏي وزير کي سڀني شين جي ڄاڻ آهي، ان جو ڪهڙيون ترجيحات آهن ان تي وڏي وزير سان ضرور ڳالهائيندس جيڪڏهن ان کي وفاقي حڪومت جي مدد گهربل آهي ته آئون خاطري ڪرايان ٿو ته ڀرپور تعاون ڏنو ويندو، سنڌ حڪومت پاران ڪراچي جو ڪچرو کڻڻ واري مهم بابت ڪيل سوال تي گورنر سنڌ چيو ته ان ڏس ۾ هر ممڪن مدد ۽ تعاون جي پڻ خاطري ڪرائي آهي. ان کان پهرين وفاقي وزير انفارميشن ٽيڪنالاجي ڊاڪٽر خالد مقبول به ڪانفرنس کي خطاب ڪندي پنهنجي وزارت پاران ورتل اُپائن تي روشني وڌي.