صدر اسماعیلی کونسل برائے پاکستان حافظ شیر علی نے گورنر سندھ عمران اسماعیل سے گورنر ہاوس میں ملاقات کی
حافظ شیرعلی نے 25 اور 26 ستمبر 2021 کے اختتام ہفتہ کے دوران منائے جانے والے عالمی اسماعیلی شہری دن کے بارے میں آگاہ کیا
انھوں نے پاکستان میں سماجی و اقتصادی اور ثقافتی ترقی کے مختلف شعبوں میں کمیونٹی کے مختلف شعبوں میں رضاکارانہ کاموں پر بھی روشنی ڈالی
اسماعیلی عالمی دن کے موقعہ پر ملکی ٹیمیں قدرتی ماحول کی دیکھ بھال اور فروغ کے لیے اقدامات کا جائزہ لیں گی۔ حافظ شیر علی
اسماعیلی عالمی دن کے موقعے پرکوویڈ 19 وبائی امراض سے پیدا ہونے والی صورتحال کو کم کرنے کے لیے امدادی کوششوں کو بھی تیز کیا جائے گا۔ حافظ شیر علی
اسماعیلی کمیونٹی کی جانب سے مختلف شعبوں میں رضاکارانہ سماجی خدمات اور سپورٹ قابل تحسین ہیں۔ گورنر سندھ
عوام کو تعلیم، صحت، صحتمند ماحول اور انفراء اسٹرکچر کی فراہمی حکومت کی بنیادی ترجیہات میں شامل ہے۔ گورنر سندھ

Governor Sindh distributes financial assistance cheques among affectees of 2010 floods

Governor Sindh distributes financial assistance cheques among affectees of 2010 floods

۔2010ءمیں سیلاب سے متاثرہ افراد میں امدادی چیک کی تقسیم

کراچی (ستمبر 06)
گورنر سندھ عمران اسماعیل نے ماری پور مشرف کالونی پانچ سو کوارٹر میں منعقدہ تقریب میں 2010ء میں سیلاب سے متاثرہ افراد میں امدادی چیک تقسیم کئے۔ سیلاب کے بعد اندرون سندھ سے متاثرہ لوگ یہاں منتقل کئیے گئے تھے۔ بعد ازاں گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اپنے خطاب میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر گیارہ سال بعد آج بیت المال سے یہ چیک بانٹے گئے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ میرا رب جانتا ہے اس نے کس سے کیا کام لیا لیکن عمران خان کیوں کہ ہمدردی کے جذبات رکھتے ہیں اس لئیے یہ نیک کام اللہ تعالی نے اُن سے لیا اور انسانیت کی بھلائی کے مذید کام موجودہ حکومت سر انجام دے گی۔

گورنر سندھ نے چیک وصول کرنے والوں سے کہا کہ اگر آپ کا بینک اکاونٹ نہیں بنا ہوا ہے تو پوسٹ آفس سے اس چیک کو کیش کروایا جاسکتا ہے اور اس کے علاوہ کل بینک منیجر کے ذریعے یہاں لوگوں کے اکاوئنٹ بھی کھولے جائیں گے اور لوگوں کو اپنے اکاوئنٹ کھولنے اور چیک کیش کرانے کے لئے کوئی چارجز بھی ادا نہیں کرنے ہوں گے۔ انھوں نے مذید کہا اب ماڈل خیمہ بستی بنائیں گے اور لوگوں کو ہر ممکن سہولت سے آراستہ بہترین خیمہ بستیاں بھی بنا کردیں گے۔ کراچی میں سڑکوں کی حالت زار، پانی کی کمی اور سیوریج کی ابتر صورتحال کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں گورنر سندھ نے کہا کہ ان تمام امور کی بنیادی ذمہ داری لوکل گورنمنٹ اور کے ایم سی کی ہے مگر سندھ حکومت نے سلیکٹڈ ایڈمنسٹریٹر مقرر کر کے شہر کو مذید پیچھے دھکیل دیا ہے۔

بیت المال کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عدنان مجید نے اپنے خیالا ت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج تیرسٹھ (63) لوگوں میں فی کس بیس ہزار مالیت کے چیک تقسیم ہوئے ہیں اور آئندہ بھی یہ سلسلہ جاری رہے گا۔