گورنر سندھ عمران اسماعیل کا یوم استحصال کشمیر کے موقع پر پیغام
آج ملک بھر میں ریاستی سطح پر یوم استحصال کشمیر منایا جارہا ہے۔
اس کا مقصد اقوام ِ عالم کو یہ باور کرانا ہے کہ 5اگست 2019 کو ہندوستان نے یکطرفہ اقدام کرتے ہوئے غیر قانونی طریقے سے جموں کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکے وہاں بدترین مظالم کا سلسلہ شروع کیا۔ گورنر سندھ
آرٹیکل 370 کے خاتمے کے بعد ہندوستان ہر حربہ آزما چکا ہے لیکن اہل کشمیر کا جذبہ حریت سرد نہیں ہوا۔ گورنر سندھ
مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی بلیک آوٹ آج بھی جاری ہے۔ عمران اسماعیل
مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام اپنے بنیادی حقوق سے آج بھی محروم ہیں۔ گورنر سندھ
وزیر اعظم پاکستان نے اقوام متحدہ کے 74ویں اجلاس میں کشمیریوں کا مقدمہ احسن طریقے سے پیش کرکے کشمیریوں کے سفیر کے طور پر آواز بلند کی۔ عمران اسماعیل
آج کے دن پوری پاکستانی قوم اور دنیا میں جہاں جہاں کشمیری بستے ہیں کشمیریوں کے ساتھ کئیے جانے والے استحصال کو اجاگر کریں اور ان کے ساتھ تجدید عہد کریں گے۔ گورنر سندھ
کشمیری عوام آزادی حاصل کرکے رہیں گے اور ہماری حکومت اس عزم و استقلال میں کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہے۔ گورنر سندھ

Chief Minister Sindh Syed Murad Ali Shah called on Governor Sindh Imran Ismail at Governor House.

Chief Minister Sindh Syed Murad Ali Shah called on Governor Sindh Imran Ismail at Governor House.

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی گورنر ہاﺅس میں ملاقات ہوئی جہاں ورکنگ ریلیشن کو بہتر بنانے اور دیگر باہمی دلچسپی کے حامل امور پر تفصیلی بات چیت ہوئی، سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف فردوس شمیم نقوی اور پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ، صوبائی وزیر لوکل گورنمنٹ سعید غنی، صوبائی وزیر ایکسائز مکیش کمار چاﺅلہ اور وزیراعلیٰ کے مشیر برائے اطلاعات مرتضی وہاب بھی وزیر اعلیٰ سندھ کے ہمراہ موجود تھے۔

عوام کے وسیع تر مفاد میں باہمی رابطوں کو مزید موثر بنانے کی ضرورت پر زور عوام کی بہتری کے لئے وفاق اور سندھ حکومت کے درمیان ریلیشن شپ مزید بہتر کرنے پر اتفاق کیا گیا۔