گورنر سندھ عمران اسماعیل کی ڈاو یونیورسٹی آف ہیلتھ اینڈ سائنسز میں دسواں سالانہ تقریب تقسیم اسناد میں شرکت 
تقریب میں وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی، پرو وائس چانسلر زرناز واحد، پروفیسرز، رجسٹرار، اور طالبعلموں کی بڑی تعداد شریک تھی
تقریب میں 1349 طلبا و طالبات کو گریجویشن، پوسٹ گریجویٹ، ڈپلومہ اور ڈاکٹریٹ کی ڈگریاں تفویض جبکہ دو طالب علموں کو پی ایچ ڈی کی ڈگریاں دی گئیں 
اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے 27 طالبعلموں کو سونے، 27 کو چاندی اور 27 کو کانسی کے تمغوں سے نوازا جائیگا
آپ خوش قسمت طالبعلم ہیں جو یہاں موجود ہیں اور آپ سے زیادہ والدین خوش قسمت ہیں جنکی خواہش پوری ہوئی ہے۔ گورنرسندھ
آپکی ذمہ داری ہے کہ یہاں سے جاکر اپنے ملک کے لئے خدمات انجام دیں ۔ گورنرسندھ
حکومت پاکستان نے کامیاب جوان کے نام سے اسکیم کا آغاز کیا ہے جس کے تحت ایک لاکھ سے پچاس لاکھ تک کا قرضہ فراہم کیا جارہا ہے۔ گورنرسندھ
جس سے اپنا کلینک کھول سکتے ہیں اپنی خدمات اس ملک اور عوام کو دے سکتے ہیں.

Governor Sindh expresses condolence with PTI leader Khalid Akbar Jatoi over the sad demise of his sister.

Governor Sindh expresses condolence with PTI leader Khalid Akbar Jatoi over the sad demise of his sister.

Governor Sindh Imran Ismail along with Sadaqat Jatoi, Dr. Hadi Bux Jatoi, Khawand Bux Jahejo and other party leaders visited the residence of PTI leader Khalid Akbar Jatoi in Hyderabad to express condolence with him over the sad demise of his sister.

Talking to media and the notables during his brief visit to Hyderabad, the governor said mega development projects would be launched in Hyderabad and Prime Minister Imran Khan would soon inaugurate these projects.

He said the country was passing through a critical atmosphere so confrontational politics should be avoided.

The governor also said the PTI government inherited deteriorated economic situation due to bad governance of the previous rulers, adding with the prudent policies of dynamic economic team, economic stability had been restored.

_________________________________________________

حیدرآباد یونیورسٹی کے مسائل حل ہوگئے پی سی ون اگلے ماہ تیار کرلیں گے۔ گورنرسندھ 

شہر میں ترقی کی بہت ضرورت ہے با لخصوص انفرااسٹرکچر کی، خالد جتوئی کی ہمشیرہ کی تعزیت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو 

کراچی نومبر 26 

گورنرسندھ عمران اسماعیل نے خالد جتوئی کی ہمشیرہ کی فاتحہ خوانی میں شرکت کے لئے حیدرآباد میں ان کے گھر گئے جہاں ان کا استقبال خالد جتوئی اور ان کے اہل خانہ نے کیا ۔ اس موقع پر مرحومہ کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنرسندھ نے کہا کہ حیدرآباد یونیورسٹی کے معاملے میں کچھ قانونی مسائل تھے جو اب حل کر لئے گئے ہیں حال ہی میں صدر مملکت کے پاس اس ضمن میں میٹنگ ہوئی ہے جس میں سارے لوگ موجود تھے جن میں HEC ، بحریہ اور سول ایوی ایشن سمیت دیگر شامل تھے ، یونیورسٹی کے حوالے سے بھرپور طریقے سے کام ہو رہا ہے جو قانونی پیچیدگی تھی وہ اب دور کرلی گئی ہے اگلے ایک ماہ میں اس کا پی سی و ن تیار کرلیا جائے گا جس کے بعد اس پر کام شروع ہوجائے گا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں آج خالد جتوئی کی بہن کی تعزیت کے لئے حیدرآباد آیاہوں حیدرآباد میں بہت ترقی کی ضرورت ہے خاص طورپر انفرااسٹرکچر کی تو بہت ضرورت ہے وزیر اعظم نے سندھ کی ترقی کے لئے جو فنڈ ز مختص کئے ہیں اس میں سے حیدرآباد کو بھی ایک معقول حصہ دیا جائے گا کو شش ہوگی کہ زیادہ سے زیادہ وہ کا م ہو ں جس سے عام آدمی کو زیادہ فائدہ پہنچے میں نے یہاں کی سڑکیں دیکھی ہیں انشاءاللہ وزیراعظم کے پروگرام کے تحت اس شہر میں مختلف پروجیکٹس شروع کئے جائیں گے ۔ بعدازں گورنر سندھ نے شہریوں اور عوام کے مسائل بھی سنے اور موقع پر ہدایت جاری کیں۔ اس موقع پر کمشنر حیدرآباد محمد عباس بلوچ، ڈی ائی جی سندھ پولیس حیدرآباد محمد نعیم شیخ، ایس ایس پی حیدرآباد عدیل چانڈیو اور دیگر ضلعی انتظامیہ کے افسران بھی موجود تھے۔ گورنر سندھ نے واضح الفاظ میں تمام موجود افسران کو کہا کہ کسی فرد کے ساتھ کسی بھی قسم کی ناانصافی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، قانون کا اطلاق ہر خاص و عام پر یکساں ہونا چاہئے کیونکہ موجودہ وزیر اعظم کا یہ وژن ہے کہ وہ پاکستان کو مدینہ کی ریاست بائے جہاں ہر ایک کے لیے انصاف کا معیار ایک جیسا تھا۔