وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت پر گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کنوینر ایم کیو ایم پاکستان و وفاقی وزیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی سے رابطہ
گورنر سندھ نے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کو وزیر اعظم کا پیغام پہنچایا کہ تحریک انصاف اور ایم کیو ایم پاکستان کے درمیان باہمی احترام کا رشتہ ہے۔
گورنر سندھ نے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی پر واضح کیا کہ تحریک انصاف کی حکومت ایم کیو ایم پاکستان کے مینڈیٹ کا احترام کرتے ہوئے اس کے ساتھ آگے چلنے کی خواہاں ہے اور یہی وزیر اعظم پاکستان کی پالیسی ہے۔
گورنر سندھ نے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی سے کہا کہ مستقبل میں بھی ملک، بالخصوص سندھ کے شہری علاقوں کے مسائل کے حل کے لئے تحریک انصاف ایم کیو ایم پاکستان کے ساتھ مل کر چلنا چاہتی ہے

A delegation of National Defense University Iraq called on Governor Sindh Imran Ismail at Governor House. Governor Sindh welcomed the delegation and expressed his desire to increase military, economic and cultural ties between the two countries.

A delegation of National Defense University Iraq called on Governor Sindh Imran Ismail at Governor House. Governor Sindh welcomed the delegation and expressed his desire to increase military, economic and cultural ties between the two countries.

گورنر سندھ سے عراقی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی، وار اینڈ اسٹاف کے 23 رکنی وفد کی ملاقات 

کراچی اکتوبر 12

گورنر سندھ عمران اسماعیل سے بریگیڈیئر خالد عبدالحسین حسن کی قیادت میں عراقی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی ، وار اینڈ اسٹاف کالج کے 23 رکنی وفد نے گورنر ہاﺅس میں ملاقات کی ۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ موجودہ حکومت کے دور میں پورے ملک میں امن و امان کی صورتحال میں بہت حد تک بہتری آئی ہے جبکہ ملک میں ثقافتی ، معاشی ، ترقیاتی کاموں سمیت دیگر سرگرمیاں اپنے عروج پر ہیں اور یہی وجہ ہے کہ صوبہ سمیت ملک بھر میں بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہواہے۔ انہو ں نے مزید کہا کہا مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہی ممکن ہے اس ضمن میں پوری مسلم امہ کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ عراق اور اس کے دارالحکومت بغداد کی اسلامی تاریخ میں غیر معمولی اہمیت ہے، پاکستان عراق کے ساتھ اپنے تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے، پاکستان اور عراق عظیم تاریخی اور مذہبی روابط کے ذریعے جڑے ہوئے ہیں جس نے دونوں ممالک کے مابین موجودہ تعلقات کو مزید گہرا کیا۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ عراق میں موجود مذہبی مقامات ہمارے دلوں کے بہت نزدیک ہیں یہی وجہ ہے کہ ہر سال پاکستانیوں کی ایک بڑی تعداد مذہبی مقامات کی زیارت کے لئے عراق جاتی ہے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین فوجی اور اقتصادی تعلقات وقت کی اہم ضرورت ہے، پاکستان عراق کے ساتھ تجارت ، تعلیم اور ثقافت سمیت متعدد شعبوں میں تعاون بڑھانے کا خواہش مند ہے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین فوجی و تجارتی وفود کے تبدلوں سے تعلقات میں مزید بہتری آئے گی۔ ملاقات میں بریگیڈیئر خالد عبدالحسین حسن نے کہا کہ پاکستان اور عراق کے درمیان بڑے دیرینہ ثقافتی، مذہبی اور تاریخی تعلقات ہیں، پاکستان کے دورے سے بے شمار یادگار لے کر جارہے ہیں۔ بریگیڈیئر خالد نے گورنر سندھ کی مہمان نوازی کا شکریہ بھی ادا کیا۔ بریگیڈیئرخالد عبدالحسین حسن نے عراقی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کی جانب سے گورنر سندھ کو یادگاری شیلڈ بھی پیش کی۔