گورنر سندھ عمران اسماعیل کی ڈاو یونیورسٹی آف ہیلتھ اینڈ سائنسز میں دسواں سالانہ تقریب تقسیم اسناد میں شرکت 
تقریب میں وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی، پرو وائس چانسلر زرناز واحد، پروفیسرز، رجسٹرار، اور طالبعلموں کی بڑی تعداد شریک تھی
تقریب میں 1349 طلبا و طالبات کو گریجویشن، پوسٹ گریجویٹ، ڈپلومہ اور ڈاکٹریٹ کی ڈگریاں تفویض جبکہ دو طالب علموں کو پی ایچ ڈی کی ڈگریاں دی گئیں 
اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے 27 طالبعلموں کو سونے، 27 کو چاندی اور 27 کو کانسی کے تمغوں سے نوازا جائیگا
آپ خوش قسمت طالبعلم ہیں جو یہاں موجود ہیں اور آپ سے زیادہ والدین خوش قسمت ہیں جنکی خواہش پوری ہوئی ہے۔ گورنرسندھ
آپکی ذمہ داری ہے کہ یہاں سے جاکر اپنے ملک کے لئے خدمات انجام دیں ۔ گورنرسندھ
حکومت پاکستان نے کامیاب جوان کے نام سے اسکیم کا آغاز کیا ہے جس کے تحت ایک لاکھ سے پچاس لاکھ تک کا قرضہ فراہم کیا جارہا ہے۔ گورنرسندھ
جس سے اپنا کلینک کھول سکتے ہیں اپنی خدمات اس ملک اور عوام کو دے سکتے ہیں.

Governor Imran Ismail on Friday went to see off his Holiness Dr. Syedna Mufaddal Saifuddin, Spiritual Leader of the Dawoodi Bohra Community at Karachi airport.

Governor Imran Ismail on Friday went to see off his Holiness Dr. Syedna Mufaddal Saifuddin, Spiritual Leader of the Dawoodi Bohra Community at Karachi airport.

Governor Imran Ismail on Friday went to see off his Holiness Dr. Syedna Mufaddal Saifuddin, Spiritual Leader of the Dawoodi Bohra Community at Karachi airport.

On the occasion, Governor Ismail thanked his holiness for him of coming to Pakistan and that his presence here was an honour for us. Governor Sindh also hoped that his holiness will keep on bringing the message of peace to Pakistan.

گورنرسندھ کا روحانی پیشوا سیدنا مفضل سیف الدین کو کراچی ایئر پورٹ پر الوداع

کراچی جولائی 26

گورنرسندھ عمران اسماعیل نے بوہری کمیونٹی کے روحانی پیشوا سیدنا مفضل سیف الدین کو کراچی ایئر پورٹ پر الوداع کیا۔ اس موقع پر گورنرسندھ نے سیدنا مفضل سیف الدین کا پاکستان آمد پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہ آئندہ بھی پاکستان میں امن کا پیغام لے کر آتے رہیں گے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ سیدنا مفضل سیف الدین کی جانب سے امن کے لیے دی جانے والی تعلیمات اہمیت کی حامل ہیں، سیدنا مفضل سیف الدین کی پاکستان آمد ہمارے لئے عزت و فخر کا باعث ہے۔