‏اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کا 50 سال بعد کشمیر پراجلاس پاکستان کی بھرپور سفارتی کامیابی ہے۔
بھارت کسی خوش فہمی میں نہ رہے۔
بھارتی وزیردفاع گیدڑبھپکیاں نہ دیں،ہر جارحیت کامنہ توڑ جواب دیاجاۓ گا۔
ہم اپنے کشمیری بھائی بہنوں کے حق خود ارادیت کے حصول کے لیۓ ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

A four-member delegation of Malaysian Associates called on Governor Imran Ismail today at Governor House in Karachi.

A four-member delegation of Malaysian Associates called on Governor Imran Ismail today at Governor House in Karachi.

گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملائیشین ایسوسی ایٹس کے چار رکنی وفد نے گورنر ہاﺅس میں ملاقات کی۔ شرکاءنے دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات کو مزید فروغ دینے، تجارت اور سرمایہ کاری میں اضافہ کی اہمیت سمیت دیگر باہمی دلچسپی کے حامل امور پر تبادلہ خیال کیا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ موجودہ حکومت بیرونی سرمایہ کاری اور تجارت کے فروغ کے لئے ہر ممکن اقدامات کو یقینی بنارہی ہے اس ضمن میں کاروبار کرنے میں آسانیاں پیدا کی جارہی ہیں تاکہ درپیش مسائل اور رکاوٹوں کو فوری دور کیا جاسکے۔ عمران اسماعیل نے وفاقی حکومت کی جانب سے عوامی بہبود کے لئے شروع کئے گئے منصوبوں ، کراچی انفرااسٹر کچر کی بحالی، ماس ٹرانزٹ کی بہتری، صاف پانی کی فراہمی سمیت دیگر منصوبوں کے بارے میں وفد کو تفصیلات سے آگاہ کیا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری کی وسیع گنجائش موجود ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ دونوں ممالک کے ٹورز آپریٹرز باہمی تعاون سے پاکستان میں موجود سیاحتی مقامات کے بارے ایک دوسرے کی عوام کوآگاہی فراہم کریں۔ اس موقع پر وفد کی جانب سے تعاون کی یقین دہانی پر گورنر سندھ نے کہا کہ باہمی کاوشوں کا حسین امتزاج یقینی طور پر پاکستان کی موجودہ صورت حال کو بہتری و تبدیلی کی جانب گامزن کرے گا جو کہ درحقیقت حکومت پاکستان کا مشن و اولین مقصد ہے۔ ملائیشین وفد نے گورنر سندھ کو بتایا کہ ان کے دورے کا اولین مقصد پام آئل سے منسلک مقامی صنعتکاروں کے باہمی تعاون سے اس سیکٹر میں مزید سرمایہ کاری کرنا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ بیرونی سرمایہ کاری کے فروغ کےلئے کئے گئے حکومتی اقدامات پرکشش ہیں اس ضمن میں ملائیشین سرمایہ کار بھی اپنی مصنوعات کی درآمد کو مزید بڑھانے کے خواہاں ہیں۔گورنر سندھ سے ملائیشین ایسوسی ایٹس کے چار رکنی وفد کی گورنر ہاﺅس میں ملاقات